• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • ہندوستانی سائنسدانوں کا کارنامہ، اومیکرون کو لیب میں کیا آیسولیٹ کردیا

ہندوستانی سائنسدانوں کا کارنامہ، اومیکرون کو لیب میں کیا آیسولیٹ کردیا

ہندوستانی محققین ان تمام سوالوں کے جوابات تلاش کر رہے ہیں کہ اومیکرون ویریئنٹ ہندوستان کے لوگوں کو کس طرح متاثر کر رہا ہے، نیا تناؤ کتنا متعدی ہے، فی الحال دستیاب ویکسین کتنی کارآمد ہیں، ان میں بڑی کامیابی ملی ہے۔ سائنسدانوں نے لیبارٹری میں اومیکرون مختلف قسم کو الگ تھلگ کرنے اور اس کی ثقافت کرنے میں کامیابی حاصل کی ہے۔ بایوٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ کے تحت ایک خودمختار ادارہ ٹرانسلیشنل ہیلتھ سائنس اینڈ ٹیکنولوضی انسٹیٹیوٹ کے سائنسدان اومیکرون پر تحقیق جاری رکھیں گے۔ تحقیق سے وابستہ افراد نے اس کی تصدیق کی ہے۔

تحقیق سے کیا پتہ چلے گا؟
انڈین کونسل آف میڈیکل ریسرچ (آئی سی ایم آر) کے ڈائریکٹر جنرل بلرام بھارگوا نے کہا کہ آئی سی ایم آر اور ڈی بی ٹی دونوں کو وائرس کی ثقافت میں کچھ کامیابی ملی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ‘ہمیں شروع میں کچھ پریشانی ہوئی تھی، لیکن اب ہمیں کچھ کامیابی ملی ہے۔’ لیب میں کلچرڈ اومیکرون پر تحقیق سے پتہ چلے گا کہ اس کا ہندوستانی آبادی پر کیا اثر پڑتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس کے انفیکشن اور ویکسین پر اس کے اثرات کے بارے میں بھی نئی معلومات سامنے آئیں گی۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

ماہرین کے مطابق یہ معلوم کرنے میں کچھ وقت لگے گا کہ آیا نیا ویریئنٹ ویکسین سے محفوظ ہے یا نہیں۔ یہ بھی سامنے آئے گا کہ یہ متاثرہ شخص پر کتنا برا اثر ڈال سکتا ہے۔ نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف وائرولوجی ان آئی وے، پونے، بھی اومیکرون تناؤ کو الگ تھلگ اور ثقافت کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

ایک بار تحقیق مکمل ہونے کے بعد، ماہرین کو معلوم ہو جائے گا کہ آیا یہ قسم مدافعتی ردعمل سے بچ سکتی ہے یا نہیں۔ وائرس کتنا متعدی ہے اس کا بھی پتہ چل جائے گا۔ نئے تناؤ پر تحقیق سے بوسٹر خوراک کے حوالے سے پالیسی طے کرنے میں بھی مدد ملے گی۔ نیشنل ایڈوائزری گروپ آن امیونائزیشن کا اجلاس جنوری میں ہوگا۔ اس میں بوسٹر ڈوز کے جائزے سے لے کر بچوں کی ویکسینیشن تک اضافی خوراک کی ضرورت پر بات ہو سکتی ہے۔

Advertisements
julia rana solicitors

ایک سینئر اہلکار نے کہا، “اس وقت تک مختلف قسم کو لیبارٹری میں اگایا جا چکا ہو گا اور ہمارے پاس اومیکرون کے خلاف ویکسین کی افادیت کے بارے میں کچھ جوابات ہوں گے۔”

  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • merkit.pk

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply