ایران کے جوہری مسئلے کا مستقل حل چاہتے ہیں: اسرائیل

صیہونی حکومت کے وزیر خارجہ نے دعویٰ کیا ہے کہ تل ابیب ان کے بقول ایران کے جوہری خطرے کے مستقل حل میں دلچسپی رکھتا ہے۔

لیپڈ نے ٹیلی گراف کو انٹرویو دیتے ہوئے ایران کے خلاف بے بنیاد دعووں کا اعادہ کیا۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

انہوں نے کہا کہ صیہونی حکومت اور اس کے مغربی اتحادیوں کو جوہری ہتھیاروں تک ایران کی رسائی کو روکنے کے لیے موثر فوجی خطرہ تیار کرنا چاہیے۔

اسرائیل کے وزیر خارجہ نے مغرب سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ویانا مذاکرات میں پیش رفت نہ ہونے کی صورت میں ایران کے ساتھ نمٹنے کے لیے موثر فوجی کارروائی کا آپشن تیار رکھیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر ایرانی یہ سوچتے ہیں کہ دنیا ان سے مقابلہ کرنے میں سنجیدہ نہیں ہے تو وہ بم بنانے کا مقابلہ کریں گے جیسا کہ جائر لیپڈ نے کہا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں یہ واضح کرنا ہوگا کہ دنیا اس قسم کے کام کی اجازت نہیں دے گی، اس لیے ایک موثر فوجی آپشن کو میز پر لانا ہوگا۔ اسرائیل کے وزیر خارجہ نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا ہے کہ ایران پر ممکنہ حد تک دباؤ بڑھایا جائے اور اسے سفارتی طور پر تنہا کیا جائے۔

Advertisements
julia rana solicitors london

انہوں نے اس دعوے کو دہرایا کہ ایران مغربی ایشیا کی ترقی میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ اسرائیل کے وزیر خارجہ کے مطابق اب جب کہ ہم اسرائیل کے اندر عوام سے عوام کے درمیان پل بنانے پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں، ایران اس طرح عراق اور شام کے راستے اسرائیل تک دہشت گردی کا پل بنا رہا ہے۔

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply