کینیڈا: حجاب کی وجہ سے ٹیچر کو پڑھانے سے ہٹا دیا گیا

کینیڈا میں ایک سکول ٹیچر نے فاطمہ انوری نامی ٹیچر کو حجاب پہننے پر پڑھانے سے فارغ کر دیا۔

اسکول کے اس اقدام نے غم و غصے اور بحث کو جنم دیا ہے کہ کینیڈا کا آئین اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کے معاملے میں کتنا سنجیدہ ہے۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

واشنگٹن پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق کینیڈا کے صوبے کیوبک کے شہر چیلسی کے ایک اسکول نے مسلمان ٹیچر فاطمہ انوری کو حجاب کی وجہ سے نوکری سے نکال دیا اور انہیں پڑھانے کے علاوہ دیگر کام کرنے کی ذمہ داری سونپ دی۔

اسکول انتظامیہ نے یہ کارروائی صوبے کے ایک قانون کی بنیاد پر کی ہے، جس میں انتظامیہ کو کام کی جگہ پر مذہبی علامات کا استعمال کرنے والوں کے خلاف کارروائی کا حق دیا گیا ہے۔

اسکول کے اس اقدام نے کینیڈا میں غم و غصے کو جنم دیا ہے اور اس بحث کو جنم دیا ہے کہ اس قانون کو منسوخ کیا جانا چاہیے۔ کئی شہروں کے میئرز نے کہا ہے کہ وہ اس قانون کو ہٹانے کی پوری کوشش کریں گے۔

Advertisements
julia rana solicitors

وفاقی وزیر مارک ملر نے اس قانون کی مذمت کرتے ہوئے اسے بزدلی قرار دیا۔ اقوام متحدہ میں کینیڈا کے سفیر باب راے نے کہا کہ قانون اور اسکول کا فیصلہ انسانی حقوق کے بین الاقوامی اعلامیے سے متصادم ہے۔

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors
  • julia rana solicitors london

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply