• صفحہ اول
  • /
  • خبریں
  • /
  • کرونا سرٹیفکیٹ پر مودی کی تصویر،اعتراض پر شہری کو ایک لاکھ روپے جرمانہ

کرونا سرٹیفکیٹ پر مودی کی تصویر،اعتراض پر شہری کو ایک لاکھ روپے جرمانہ

بھارتی شہری کو مودی سرکار کی شکایت کرنا مہنگی پڑ گئی، عدالت نے شہری کو ہی بھارتی 1 لاکھ جرمانے کی سزا سنا دی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق کورونا ویکسین کے سرٹیفیکیٹ پر بھارتی وزیراعظم کی تصویر کو  اپنی تشہیری مہم بنانے پر شہری نے  عدالت میں شکایت درج کرائی تھی، جس میں شہری نے مودی کی تصویر ہٹانے کا مطالبہ کیا تھا۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

کیرالہ کی عدالت نے شہری کی استدعا پر اسے ہی قصور وار ٹھہرا دیا اور کہا کہ شہری نے عدالت کا وقت ضائع کیا ہے اور اسے اب 6 ہفتوں کے اندر بھارتی ایک لاکھ روپے کا جرمانہ جمع کرانا ہوگا۔ اگر وہ ایسا نہیں کرتا تو اسٹیٹ لیگل سروسز اتھارٹی کو اختیار دیا گیا ہے کہ وہ اس کے اثاثوں کو بیچ کر مقرر کردہ رقم وصول کرے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق عدالت میں جج نے شہری پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مودی سرکار کی تعریفیں ہی شروع کر دیں، کہا کہ وہ کیوں اپنے وزیراعظم کی تصویر دیکھ کر شرمندگی محسوس کر رہا ہے، ہم تو اپنے وزیراعظم کی تصویر دیکھ کر فخر محسوس کرتے ہیں۔

جج نے مزید کہا کہ کوئی یہ نہیں کہہ سکتا کہ وزیر اعظم کانگریس کا ہے یا بی جے پی کا  یا کسی سیاسی پارٹی کا وزیر اعظم ہے۔ لیکن ایک بار جب آئین کے مطابق وزیر اعظم منتخب ہو جاتا ہے تو وہ ہمارے ملک کا وزیر اعظم ہوتا ہے۔

پیٹر میالی نامی شہری  نے مودی کے چہرے کو ان کے ویکسین سرٹیفکیٹ پر پرنٹ کیے جانے پر اعتراض کیا تھا،انہوں نے موقف اپنایا تھا کہ بھارت میں ویکسینیشن مہم مودی کے حق میں “میڈیا مہم” میں بدل گئی ہے۔ اس نے اپنی ویکسین کی قیمت خود ادا کی ہے اور ان کے ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ پر مودی کی تصویر کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔

Advertisements
julia rana solicitors london

شہری کے وکیل نے عدالت کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کرنے کا اعلان بھی کیا ہے۔

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors london
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply