کوئی تو چارہ ساز ہوتا۔۔انجم گیلانی

سیالکوٹ واقعے میں اپنی زندگی خطرے میں ڈال کر مقتول کی زندگی بچانے کی کوشش کرنے والے دو عظیم انسانوں کا نام بھی آیا ہے ۔میں علامہ عمار خان ناصر صاحب کی اس تجویز سے اتفاق کرتا ہوں کہ حکومتی سطح پر ایسے عظیم کرداروں کو پذیرائی بخشی جاۓ۔ مذہبی سماجی سیاسی اور ملٹری قیادت کا فرض ہے کہ وہ سارے مل کر ان جان بچانے کی کوشش کرنے والوں کو اتنی عزت دیں کہ ریاستی اور سماجی سطح پر اس بیانیے کو عزت ملے کہ حقیقی ہیروز جان بچانے والے ہوتے ہیں۔ آخر کب تک ہم ناحق جان لینے والوں کی عظمت کے گن گا کر انسانی خون کی حرمت پامال کرتے رہیں گے۔

جب جان لینے والوں کو معلوم ہے کہ اگر ہمیں عدالت نے پھانسی کی سزا بھی دی تو ہمارے جنازے میں لاکھوں لوگ شرکت کرنا سعادت سمجھیں گے، تو پھر لاقانونیت, تشدد, جنون حیوانیت ایک مقدس سماجی قدر کے طور پر مضبوط ہوں تو تعجب نہیں ہونا چاہیے ۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

آج ایک زبردست موقع ہے آپ جان بچانے والوں کو ملک کا سب سے بڑا اعزاز دے کر ان کو اتنی عزت دیں کہ جان لینے والی قاتلانہ ذہنیت تنہا ہو جاۓ ۔ رحجان ساز طبقات نے اگر اس موقع پر اپنا کردار ادا نہ کیا تو پھر کبھی مشعال کبھی بنک منیجر کبھی پروفیسر اور کبھی کسی ملک کا ہمارا مہمان اسی بربریت کا نشانہ بنتے رہیں گے۔

Advertisements
julia rana solicitors

بچپن سے ہی لٹیرے قاتلوں کی عظمت کی بجاۓ اپنی نسلوں کو بنیادی سبق پڑھانا ہو گا کہ انسان کی تذلیل کر کے خدا کی تعظیم نہیں کی جا سکتی۔ انسان کے مقدس وجود کو جلا کر خدا کی رضا کے پھول نہیں چنے جا سکتے ۔لوگوں کو سمجھانا ہو گا کہ تم تصویر کا چہرہ مسخ کر کے مصور کا دل دکھا رہے ہو۔ کبھی تم سوچو بھی! کیا کر رہے ہو؟ کہاں جا رہے ہو ۔

  • julia rana solicitors london
  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors

مکالمہ
مباحثوں، الزامات و دشنام، نفرت اور دوری کے اس ماحول میں ضرورت ہے کہ ہم ایک دوسرے سے بات کریں، ایک دوسرے کی سنیں، سمجھنے کی کوشش کریں، اختلاف کریں مگر احترام سے۔ بس اسی خواہش کا نام ”مکالمہ“ ہے۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply