یوگا کس کا؟ نیپال اور بھارت کے درمیان بحث چھڑ گئی

بھارت اور نیپال کے سوشل میڈیا صارفین کے درمیان اس بات پر بحث چھڑگئی ہے کہ یوگا کی ابتدا کہاں سے ہوئی۔

نیپال کے نگراں وزیراعظم کے پی شرما اولی نے کہا ہے کہ یوگا بھارت میں نہیں بلکہ نیپال سے شروع ہوا تھا۔ اور جب یوگا کا آغاز ہوا تو بھارت نامی ملک کا کوئی وجود نہیں تھا بلکہ وہ ایک ایسا خطہ تھا جو مختلف علاقوں میں تقسیم تھا۔

FaceLore Pakistan Social Media Site
پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com

وزیراعظم اولی نے یہ باتیں یوگا کے عالمی دن کے موقعے پر اپنی رہائش گاہ میں ہونے والے ایک پروگرام کے دوران کہیں۔

سال2014 سے ہر برس 21 جون کو یوگا کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔ اس کو عالمی سطح پر متعارف کروانے کیلئے7سال قبل اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے قرارداد منظور کی تھی۔

بھارت اور نیپال کے درمیان تلخی کافی بڑھ گئی ہے۔ گزشتہ دنوں بھارتی فوج کی ایک آسامی کا اشتہار بھی اس تنازعے کا باعث بنا تھا اور بعد ازاں فوج نے اس میں سے نیپالی گورکھا کا ذکر ہٹا دیا تھا۔

Advertisements
julia rana solicitors london

گزشتہ سال بھارت کے وزیر خارجہ نے بودھ مذہب کے بانی گوتم بدھ کے بارے میں کہا تھا کہ وہ انڈین ہیں تو نیپال نے سخت اعتراض کیا تھا اور حکومت ہند کو اس سلسلے میں وضاحت دینی پڑی تھی۔

  • FaceLore Pakistan Social Media Site
    پاکستان کی بہترین سوشل میڈیا سائٹ: فیس لور www.facelore.com
  • julia rana solicitors london
  • merkit.pk
  • julia rana solicitors

خبریں
مکالمہ پر لگنے والی خبریں دیگر زرائع سے لی جاتی ہیں اور مکمل غیرجانبداری سے شائع کی جاتی ہیں۔ کسی خبر کی غلطی کی نشاندہی فورا ایڈیٹر سے کیجئے

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

Leave a Reply