سُوکھے گلاب (اختصاریہ)۔۔شاہد محمود

سوکھے گلاب ۔۔۔ آنکھیں نم کرنے کو کافی ہوتے ۔۔۔۔
سپائن انجری کی وجہ سے وہیل چیئر پر ہوں تو کہیں آ جا نہیں سکتا تو بیگم کسی دن پارک واک کے لئے گئیں تو واپسی پر میرے لئے گلاب کا ننھا سا پھول لائیں جو سارا دن میرے سینے پر دل کے مقام پر رکھا خوشبو بکھیرتا رہا ۔۔۔

میں اس کی خوشبو میں بیگم کا پیار محسوس کرتا رہا ۔۔۔

tripako tours pakistan

دو دن بعد جب گلاب کا پھول بالکل مرجھانے لگا تو میں نے اپنے لکھنے والے کاغذات میں محفوظ کر لیا ۔

کل بیگم نے ہی وہ کاغذ اٹھائے تو پھول نکل کر فرش پر بکھر گیا اور میری آنکھیں نم ہو گئیں

شاہد محمود
شاہد محمود
میرج اینڈ لیگل کنسلٹنٹ ایڈووکیٹ ہائی کورٹ

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *