ضرورت (سو الفاظ کی کہانی)۔۔سیف الرحمٰن ادیب

“یہ قبولیت کی جگہ ہے۔ یہاں کھڑے ہو کر جس چیز کی ضرورت ہو مانگ لو۔ دعا قبول ہوگی۔ بس شرط یہ ہے کہ توجہ سے مانگنا۔”
کسی نے اپنے لیے اولاد کی دعا کی،
کسی نے ترقی کا سوال کیا،
کوئی ہاتھ پھیلائے مال و دولت مانگ رہا تھا،
کوئی اچھی نوکری کے لیے دعا کر رہا تھا۔
کسی کو نافرمان اولاد کی فکر ستا رہی تھی اور کسی کو بیمار والدین کی یاد آ رہی تھی۔
میں کراچی کا تھا۔
ہاتھ اٹھائے، توجہ دی، اور آنکھیں بند کرتے ہی میری زبان سے بے اختیار نکلا:
“تین گھنٹے بجلی۔”

سیف الرحمن ادیؔب
سیف الرحمن ادیؔب
سیف الرحمن ادیؔب کراچی کےرہائشی ہیں۔روزنامہ”اسلام“میں انکی سوالفاظ کی کہانیاں شائع ہوتی رہتی ہیں۔فیسبک پر ان کاایک پیج ہےجس پر150 سےزائد سو الفاظ کی کہانیاں لکھ چکے ہیں۔اس کے علاوہ ان کی سو الفاظ کی کہانیوں کا ایک مجموعہ "اُس کے نام" بھی پی ڈی ایف کی صورت میں شائع ہو چکا ہے۔

بذریعہ فیس بک تبصرہ تحریر کریں

براہ راست تبصرہ تحریر کریں۔

Your email address will not be published. Required fields are marked *